Latest News

IUB CIDS faculty and students participate in seeds dispersal plantation drive in Cholistan Desert

 

PRO No. 195/PR

Date: 21/08/2020

Public Relations Office

The Islamia University of Bahawalpur

 

Cholistan Institute of Desert Studies (CIDS), the Islamia University of Bahawalpur organized seed broadcast activity in Cholistan desert during recent rains under Clean and Green Pakistan Campaign. Engr. Prof. Dr. Athar Mahboob, Vice Chancellor said that the main objective of this activity was to restore the indigenous flora of Cholistan desert especially the plant species. Migratory birds feed on desert insects and plants but due to overgrazing, drought, over exploitation of vegetation for fuel, timber and medicinal purposes, Cholistan desert is losing its biodiversity. Therefore, it was planned to broadcast the seeds of indigenous flora the form of seed balls and direct seed broadcast. Dr. Muhammad Abdullah, university faculty member and activity organizer stated that seeds of indigenous plants were collected from Cholistan and Seed balls making process was carried in university laboratory. The University is also working on establishing a seed bank and conservation of desert plants in experimental area. Prof. Dr. Shazia Anjum, Director, Cholistan Institute of Desert Studies briefed that Cholistan is a fragile ecosystem which is losing its native flora and fauna ultimately losing its potential to support migratory birds. Seed broad cast is an excellent conservation technique to restore desert to its original form.

Clean and Green Campaign CIDs

 

پی آر او نمبر195/20، مورخہ 21-8-2020
پبلک ریلیشنز آفس، اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور


 انجینئر پروفیسر ڈاکٹر اطہر محبوب وائس چانسلر اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کی ہدایت پر کلین اور گرین پاکستان مہم کے تحت حالیہ موسم برسات میں جامعہ کے تمام کیمپسوں کے ساتھ ساتھ صحرائے چولستان میں بھی شجر کاری مہم جاری ہے۔ چولستان انسٹی ٹیوٹ آف ڈیزٹ سٹڈیز اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور نے حالیہ بارشوں کے دوران چولستان کے مختلف علاقوں میں نباتات اور حیوانات کی افزائش اور قدرتی ماحول کی بقاء اور تحفظ کے لیے مقامی پودوں کے بیجوں کو بکھیرنے کی سرگرمی کا اہتمام کیا۔ موسمیاتی تنوع، گلوبل وارمنگ اور انسانی سرگرمیوں میں اضافے کی وجہ سے چولستانی حیاتیات بہت زیادہ متاثر ہوئی ہے۔ گزشتہ کچھ برسوں سے خشک سالی، ایندھن اور دیگر مقاصد کے لیے چولستانی نباتات اور درختوں کی کٹائی اور چراگاہوں کے ضرورت سے زیادہ استعمال کے باعث پورے صحرا میں قدرتی گھاس، پودوں اور درختوں کی افزائش میں کمی آگئی ہے۔ خوراک کی کمی کے باعث سائبیریا کے علاقوں سے ہجرت کر کے آنے والے پرندے بھی بہت زیادہ متاثر ہو رہے ہیں۔ جامعہ اسلامیہ کے ماہرین نباتیات نے 45اقسام کے پودوں کے بیج چولستان کے مختلف علاقوں میں بکھیرے۔ اس مقصد کے لیے چولستان انسٹی ٹیوٹ آف ڈیزرٹ سٹڈیز کی لیبارٹر ی میں ایک خصوصی سیڈ بینک قائم کیا گیا ہے جہاں پر چولستان میں موجود تمام پودوں، جڑی بوٹیوں، درختوں اور گھاس پھوس کے بیجوں کو ذخیرہ کیا گیا ہے۔ اِسی لیے یونیورسٹی کی جانب سے بیجوں کے بکھیر کا اہتمام کیا گیا تاکہ قدرتی نباتات بارشوں کے باعث پھلیں پھولیں اور جانور اور پرندے بھی ان سے مستفید ہوں۔ انجینئر پروفیسر ڈاکٹر اطہر محبوب،وائس چانسلر اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور نے اس ماحول دوست سرگرمی خصوصاً چولستان کی نباتاتی اور حیوانی حیات کے فروغ کے لیے پروفیسر ڈاکٹر شازیہ انجم ڈائریکٹر چولستان انسٹی ٹیوٹ آف ڈیزرٹ سٹڈیز اورڈاکٹر محمد عبداللہ اسسٹنٹ پروفیسر کی کاوشوں کو سراہا ہے

Clean and Green Campaign